مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی جاری، 24 گھنٹوں میں 9 کشمیری شہید

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشت گردی جاری، 24 گھنٹوں میں 9 کشمیری شہید

5/6/2018 3:28:18 PM :شائع کردہ

سری نگر: مقبوضہ کشمیر کے ضلع شوپیاں میں بھارتی فوج نے ریاستی دہشتگردی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مزید 5 نوجوانوں کو شہید کردیا جس کے بعد گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران شہید افراد کی تعداد 9 ہوگئی۔ بھارتی فوج کے مظالم کیخلاف حریت قیادت نے ہڑتال کی کال پر مقبوضہ وادی میں شٹر ڈاؤن۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوج نے ضلع شوپیاں کے علاقے باڈیگام میں سرچ آپریشن کے دوران 5 نوجوانوں کو فائرنگ کرکے شہید کردیا۔بھارتی فوج کے جعلی سرچ آپریشن کیخلاف علاقہ مکینوں کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا جس پر بھارتی فوج اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئی۔ بھارتی اہلکاروں نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے فائرنگ، پیلٹ گن اور آنسو گیس کی شیلنگ کی جس کے نتیجے میں متعدد مظاہرین زخمی ہوگئے جب کہ ایک شخص کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے جس کی شناخت آصف احمد میر کے نام سے ہوئی ہے۔ شہید ہونے والے افراد میں پروفیسر ڈاکٹر محمد رفیق بٹ، صدام احمد پدر، بلال احمد مہند، عادل ملک اور توصیف احمد شیخ شامل ہیں۔ بھارتی فورسز کی جانب سے بڑھتے مظالم اور نوجوانوں کو جعلی مقابلوں میں شہید کیے جانے کے خلاف حریت رہنما سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور یاسین ملک کی جانب سے ہڑتال کی کال دی گئی تھی۔ شٹر ڈاؤن ہڑتال کے باعث سری نگر سمیت مختلف شہروں میں بازار مکمل طور پر بند ہیں اور ٹریفک بھی معمول سے کم ہے۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق بھارتی فورسز نے گزشتہ روز 4 کشمیریوں کو شہید کردیا تھا جس کے خلاف حریت قیادت کی جانب سے ہڑتال کی کال دی گئی۔