سحروافطار میں کھجور کا استعمال سنت بھی ہے اور صحت بخش بھی

سحروافطار میں کھجور کا استعمال سنت بھی ہے اور صحت بخش بھی

5/17/2018 7:40:51 PM :شائع کردہ

لاہور: گرمیوں کے موسم میں روزہ ایک صبر آزما عبادت ہے۔ لیکن موثر خوراک اور غذا کے استعمال سے روزے کی سختی کو کسی حد تک کم کیا جاسکتا ہے۔ سحرو افطار میں کھجور کھانا سنت نبوی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ہے جس کو اپنا کر ہم نہ صرف ثواب کے مستحق ٹہریں گے بلکہ دن بھر میں کمزوری اور تھکاوٹ کا احساس بھی کسی حد تک کم ہوجائے گا۔ روزے کی حالت میں روزمرہ کے کام کرنا کچھ مشکل معلوم ہوتا ہے، جلد ہی تھکن محسوس ہوتی ہے اور قوت مدافعت کے متاثر ہونے کا احساس ہونے لگتا ہے۔ لیکن اگر روزے کی حالت میں بھی آپ دن بھر توانا رہنا چاہتے ہیں تو اپنی خوراک میں کھجوروں کا استعمال بڑھا دیں کیونکہ کھجوریں دوا بھی ہیں اور بہترین غذا بھی۔ ماہرین صحت کے مطابق کھجوروں میں وافر مقدار میں پروٹین، کاربو ہائیڈریٹس، فائبر، وٹامن سی، وٹامن کے اور دیگر غذائی خصوصیات شامل ہوتی ہیں۔ ماہرین کہتے ہیں کہ کھجوروں کو روزانہ اپنی خوراک میں ضرور شامل کرنا چاہیے، خصوصاً سحری میں اگر 5 سے 6 کھجوریں کھالی جائیں تو دن بھر جسم میں توانائی برقرار رہے گی۔ رمضان المبارک میں مذہبی ذوق و شوق سے سحر و افطار کھجور کے ساتھ کریں، اس سے ثواب اور توانائی دونوں حاصل ہوگی۔